جوابی بیانیے کا بیان بخدمت مفتی منیب الرّحمٰن

ہمارے ملک کے ایک نامور عالم و صاحبِ منصب مفتی منیب الرّحمٰن صاحب حالیہ دنوں میں ایک سے زیادہ مواقع اور کالموں کے ذریعے جناب جاوید احمد غامدی صاحب کے پیش کردہ جوابی بیانیے پر مختلف جہات سے تنقید کر چکے ہیں۔ حال ہی میں اُن کا مضمون’علامہ جاوید احمد غامدی کا بیانیہ’ کے عنوان…

مسئلۂِ عمرِ عائشہ بوقتِ نکاح و رخصتی

معروف اسلامی روایت کے مطابق نبی اکرم ﷺ سے نکاح کے وقت حضرت عائشہ صدیقہؓ کی عمر چھ (6) برس تھی اور رخصتی کے وقت نو (9) برس۔ انتہائی کم سنی کی یہ مبیّنہ شادی عصرِ حاضر میں دینِ اسلام کی مذمت کے لیے عمومی طور پر اور رسول اللہ ﷺ کی اپنی کردارکشی کے…

تجزیۂِ مضمون–اسلام اور ریاست: جوابی بیانیے پر ایک نظر، از محمد دین جوہر، سہ ماہی جی

(غامدی صاحب کے نقطۂ نظر کی تردید میں سہ ماہی جی، شمارہ برائے جولائی تا اکتوبر 2015 ،میں جنابمحمد دین جوہر صاحب کے بیان کردہ اعتراضات کا تجزیہ ) مجھے بعض حضرات نے کچھ وقت قبل مطلع کیا تھا کہ غامدی صاحب کے جوابی بیانیے کے نقد پر مبنی ایک رسالہ ‘جی’ کے نام سے…

(حصّہ دوم) تجزیۂ مقالہ: ”متبادل بیانیہ اصل بیانیے کی روشنی میں“ از محمد زاہد صدیق مغل صاحب، الشّریعہ

  (غامدی صاحب کے "جوابی بیانیہ” کی تردید میں جناب محمد زاہد صدیق مغل صاحب کے ماہنامہ الشّریعہ شمارہ مئی 2015 میں بیان کردہ اعتراضات کا جواب ) محمد زاہد صدیق مغل صاحب دین اسلام پر تدبر کی نگاہ رکھنے والے ایک بالغ النظر دانشور ہیں۔ وہ ایک اعلیٰ تعلیم یافتہ پیشہ ور مدرِّس ہیں…

دینی اصطلاح کسے کہتے ہیں؟

غامدی صاحب نے جب سے اپنے "جوابی بیانیے” میں یہ فرمایا ہے کہ: نہ خلافت کوئی دینی اصطلاح ہے اور نہ عالمی سطح پر اس کا قیام اسلام کا کوئی حکم تب سے ناقدین نے خلافت کے عنوان کو بہت بحث و تمحیص کا موضوع بنایا ہے۔ یہ ایک اچھا رجحان تو ہے کہ آراء…

تجزیۂ مجلّہ: ” ماہنامہ ایقاظ، خصوصی شمارہ برائے مارچ تا اپریل 2015 “

(غامدی صاحب کے نقطۂ نظر کی تردید میں ماہنامہ ایقاظ، خصوصی شمارہ برائے مارچ تا اپریل 2015 ،میں بیان کردہ اعتراضات کے جوابات ) غامدی صاحب کے جوابی بیانیہ کے کچھ پہلوؤں کی تردید میں ایقاظ کا خصوصی شمارہ شائع ہو چکا ہے جو ان کی ویب سائٹ سے حاصل کیا جا سکتا ہے۔ ایقاظ…

تجزیۂ مقالہ: ”متبادل بیانیہ اصل بیانیے کی روشنی میں (حصّہ اوّل)“ از محمد زاہد صدیق مغل صاحب، الشّریعہ

(غامدی صاحب کے "جوابی بیانیہ” کی تردید میں جناب محمد زاہد صدیق مغل صاحب کے ماہنامہ الشّریعہ شمارہ اپریل 2015 میں بیان کردہ اعتراضات کا جواب ) محمد زاہد صدیق مغل صاحب دین اسلام پر تدبر کی نگاہ رکھنے والے ایک بالغ النظر دانشور ہیں۔ وہ ایک اعلیٰ تعلیم یافتہ پیشہ ور مدرِّس ہیں اور…

تجزیۂ مقالہ ” اسلام، ریاست، حکومت اور غامدی صاحب ” از مسرور اعظم فرّخ صاحب، روزنامہ پاکستان

(غامدی صاحب کے نقطۂ نظر کی تردید میں جناب مسرور اعظم فرّخ صاحب کے بیان کردہ اعتراضات کا جواب ) جناب مسرور اعظم فرّخ صاحب نے روزنامہ پاکستان میں غامدی صاحب کے جوابی بیانیے کا تجزیہ اپنے مضمون "اسلام، ریاست، حکومت اور غامدی صاحب” کے عنوان سے پانچ (5) قسطوں میں شائع کیا ہے جس…

تجزیہ "خلافت: ایک قطعی فرض الٰہی، منجانب عمر علی صاحب (حزب التحریر)”

(غامدی صاحب کے نقطۂ نظر کی تردید میں حزب التحریر پاکستان کے بیان کردہ اعتراضات کے جوابات) جناب عمر علی صاحب اگرچہ کوئی معروف ہستی تو نہیں، لیکن چونکہ یہ مضمون انہوں نے حزب التحریر پاکستان کی ویب سائٹ پر شائع کیا ہے اس لیے اسے حزب التحریر کے نقطۂ نظر کی حیثیت سے میں…

اسلام اور ریاست – ایک فکری مباحثہ مابین غامدی اور علما

22 جنوری 2015 کو پاکستانی اخبار روزنامہ جنگ میں جاوید احمد غامدی صاحب کی جانب سے تحریر کردہ مضمون بعنوان "اسلام اور ریاست: ایک جوابی بیانیہ” شائع ہوا۔ اس مضمون میں انہوں نے مذہب (اسلام) اور ریاست کے باہمی تعلق پر مبنی مروجہ مذہبی بیانیے کے مقابل میں ایک جوابی بیانیہ پیش کیا ہے، جو…

مذاکرات کا صحیح طریقہ – حصہ دوم

تحریک طالبان پاکستان اور اس طرح کے دوسرے متحارب گروہوں کے ساتھ مذاکرات کو میں نے جن دو عنوانات میں تقسیم کرنے کی تجویز دی تھی ان میں پہلے، یعنی "عقل عامہ”، پر مفصّل بحث میں پچھلے مقالے میں کر چکا ہوں۔ اس نشر پارے میں دوسرے عنوان، یعنی "دین”، پر خامہ فرسائی کا ارادہ…

مذاکرات کا صحیح طریقہ

جس چیز کا خوف تھا وہی ہوا۔ تحریک طالبان پاکستان سے مذاکرات شروع ہوۓ، شروع تو ہونے ہی چاہیے تھے، مگر فہم و فراست کی جس اساس سے انہیں پھوٹنا اور معاملہ شناسی کی جن گہرائیوں سے انہیں امنڈنا چاہیے تھا انہیں بظاہر نظر انداز کر دیا گیا ہے۔ جلد بازی اور خام خیالی کے…